Categories
News

وہ مشہور پاکستانی اداکارہ جو سدھو موسے والا کے حق میں دعا کرنے پر تنقید کا نشانہ بن گئی

لاہور(ویب ڈیسک) پاکستانی گلوکارہ شائےگل نے اپنی بھارتی پنجابی گلوکار سدھوموسے والا کی اچانک موت سے متعلق انسٹاگرام پوسٹ پر تنقید کرنے والوں کو جواب دے دیا۔ گلوکار سدھو موسے والا کی ناگہانی موت پرشائے گل نے بھی انتہائی افسوس کا اظہار کرتے ہوئے اس کی روح کو سکون نصیب ہونے اور اس کے لواحقین کے لیے صبر کی دعا کی، تاہم شائے گل کی یہ دعا انٹرنیٹ پر موجود ہماری ’مذہبی بریگیڈ‘ کو ایک آنکھ نہ بھائی۔

ان لوگوں نے شائے گل کو یہ کہہ کر تنقید کا نشانہ بنانا شروع کر دیا کہ ایک مسلمان ہو کر اسے غیرمسلم کے لیے ایسی دعا نہیں کرنی چاہیے تھی۔ اب اس تنقید کے جواب میں شائے گل نے ایک اور انسٹاگرام پوسٹ میں کہا ہے کہ ”مجھے بہت سے ایسے پیغامات موصول ہو رہے ہیں اور میں ان سب لوگوں کو بتانا چاہتی ہوں کہ میں مسلمان نہیں ہوں، میں کرسچین ہوں اور ایک عیسائی فیملی سے تعلق رکھتی ہوں۔ چنانچہ میں دیگر مذاہب سے تعلق رکھنے والوں کے لیے دعا کر سکتی ہوں۔

علی سیٹھی اور شائے گل کے پسوڑی

“بعد ازاں شائے گل کی طرف سے کچھ لوگوں کی طرف سے موصول ہونے والے کچھ ڈائریکٹ میسجز کےا سکرین شاٹس بھی شیئر گئے۔ان میسجز میں لوگ شائے گل کو بتا رہے تھے کہ”لوگوں کی آپ پر تنقید غلط ہے۔ مسلمان بھی مذہب سے بالاتر ہو کر کسی بھی دوسرے مذہب کے شخص کے لیے ایسی دعا کر سکتے ہیں۔ جو لوگ اس دعا کی وجہ سے آپ پر تنقید کر رہے ہیں، درحقیقت وہ خود غلط راستے پر ہیں۔“واضح رہے کہ شائے گل نے کوک اسٹوڈیو سیزن 14میں علی سیٹھی کے ساتھ گائے گئے گیت ’پسوڑی‘ سے گائیکی کی دنیا میں قدم رکھا اور ان کا یہ پہلا گیت ہی سپرہٹ گیا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔