Categories
Totkay

اس طریقے سے لہسن کھائیں کولیسٹرال کبھی تنگ نہیں کرے گا

لہسن کولیسٹرول کو کنٹرول کرنے میں بھی فائدہ مند ہے۔ بہت کم لوگ جانتے ہوں گے کہ کچن میں استعمال ہونے والا لہسن بہت مفید ہے۔ آئیے آپ کو بتاتے ہیں کہ لہسن نہ صرف کسی بھی سبزی کا ذائقہ بڑھاتا ہے بلکہ یہ ایک دوا کی طرح کام بھی کرتا ہے۔ لہسن کولیسٹرول کو کنٹرول کرنے میں بھی مدد کرتا ہے۔ آئیے جانتے ہیں کہ کولیسٹرول کی سطح کو درست کرنے کے لیے لہسن کو کس طرح استعمال کرنا چاہیے۔

لہسن سے کولیسٹرال قابو کرنے کا طریقہ

ماہرین کا کہنا ہے کہ لہسن میں ایلیسن اور میگنولیا جیسی خصوصیات پائی جاتی ہیں جو کولیسٹرول کی سطح کو کم کرنے میں مفید ہیں۔ اس کے ساتھ ساتھ اس میں اینٹی وائرل، اینٹی فنگل اور اینٹی آکسیڈنٹ خصوصیات ہیں جس کی وجہ سے کولیسٹرول کنٹرول میں رہتا ہے۔ طب ایوردیک اور طب یونان میں لہسن کو بطور دوا استعمال کرنے کی تاریخ صدیوں پُرانی ہے اور اسے بیشمار بیماریوں میں بطور دوا استعمال کیا جاتا ہے خاص طور پر خون میں بڑھے ہُوئے کولیسٹرال لیول کے لیے۔ طبی ماہرین کے مطابق درمیانے سائز کی لہسن کی ایک لونگ صبح نہار مُنہ نیم گرم پانی سے کھانا کولیسٹرال کو قابو کرنے کیساتھ ساتھ جسم سے فاضل مادوں کو خارج کر دیتی ہے

اور جگر کی بھی صفائی کر دیتی ہے جس سے تازہ خون بنتا ہے اور سارے جسم میں آکسیجن کی سپلائی کا نظام بہتر ہو جاتا ہے اور تمام اعضا کو تقویت ملتی ہے۔ اسی طرح لہسن کی ایک لونگ کو باریک کاٹ کر اس میں شہد شامل کر کے کھانا بھی جہاں کولیسٹرال جیسے مرض میں شفا ہے وہاں یہ کئی طریقے سے صحت کو فائدہ دیتا ہے اور دل کی بند شریانوں کو کھول دیتا ہے۔ لہسن میں شہد کو ملا کر کھانے سے وائرل بیماریاں قریب نہیں آتی اور نزلہ زکام کھانسی جیسے مسائل کبھی سر نہیں اٹھاتے۔

کولیسٹرال کنٹرول کرنے والے دیگر کھانے
السی کا بیج کولیسٹرول کو کنٹرول کرنے میں بھی بہت فائدہ مند ہے۔ اس کے لیے آپ فلیکس کے بیج بھی استعمال کر سکتے ہیں۔ ناشتے میں جو شامل کریں اس سے بھی آپ کو ضرور فائدہ ہوگا۔ بہت کم لوگ جانتے ہیں کہ دھنیا کولیسٹرول کو کنٹرول کرنے میں بھی فائدہ مند ہے- مچھلی بھی کولیسٹرول کو کم کرنے میں اہم کردار ادا کرتی ہے۔ اگر آپ مچھلی نہیں کھاتے ہیں تو آپ اپنی خوراک میں دالیں شامل کر سکتے ہیں۔ کولیسٹرال اگر بہت زیادہ بڑھا ہو تو کھانے میں سٹرس فروٹس جیسے چکوترہ، لیموں، کینو اور مالٹا وغیرہ شامل کرنا بہت ہی فائدہ مند ثابت ہوتا ہے۔ کولیسٹرال کو کم کرنے کے لیے جہاں بہت سے کھانے مفید ہیں وہاں کئی کھانے ایسے بھی ہیں جو اس بیماری کو بڑھا دیتے ہیں۔

کولیسٹرال بڑھانے والے کھانے
چکنائی سے بھرپور تلے ہُوئے کھانے، سُرخ گوشت، دُودھ، مکھن، پنیر وغیرہ ایسے کھانے ہیں جن سے کولیسٹڑال بڑھنے کی صورت میں پرہیز بہت ضروری ہے۔ طب یونان کے طبیب حضرات کا کہنا ہے کہ بیماری آتی بھی کھانے سے ہے اور جاتی بھی کھانے سے ہے یعنی غلط خوراک جہاں کسی بیماری کو دعوت دیتی ہے وہاں مناسب اور متوازن غذا اس بیماری سے نجات بھی دلا سکتی ہے اس لیے آپ کے لیے ضروری ہے کہ کولیسٹرال کو کنٹرول میں رکھنے کے لیے جہاں ڈاکٹر کی ادویات استعمال کریں وہیں اپنی خوراک پر خاص دھیان دیں اور ورزش کو اپنی زندگی میں ایسے ہی شامل کر لیں جیسے آکیسجن۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔