Categories
صحت

چہرے پرظاہر ہونے والی یہ نشانیاں کن امراض کی جانب اشارہ کرتی ہیں

چہرہ شخصیت کا آئینہ ہوتا ہے جس طرح اس کے خدوخال اوربات کرنے کے انداز شخصیت کے کئی رازوں سے پردہ اٹھاتے ہی بلکل اسی طرح اس کی رنگت اور جلد کی سطح میں ردوبدل کئی بیماریوں کی جانب اشارہ کرتی ہے، آپ نے کبھی غورکیا ہےکہ جب بھی ڈاکٹر جسم میں بیماریوں کے لئے معائنہ کرتے تو آنکھوں زبان اور جلد کی رنگت کوپہلے نوٹ کرتے ہیں اور اسی بات سے صحت کے مسائل کا پتا لگا لیتے ہیں۔

یہاں چہرے پر ظاہر ہونے والی چند ایسی واضح نشانیوں کا ذکر کیا جارہا ہے جسے دیکھ کر آپ صحت سے جڑے مسائل کا اندازہ لگا سکتے ہیں تاکہ بروقت اس کا علاج کیا جاسکے۔پانی کی کمی کی عام علامت ہےجبکہ این وائے یو اسکول آف میڈیسن میں میڈیسن کی اسسٹنٹ پروفیسر راج ایم ڈی کا کہنا ہے کہ یہ پسینہ پیدا کرنے والے غدود کے مسئلے کی جانب بھی نشاندہی کرسکتے ہیں جس میں غدود کی کار کردگی متاثر ہوجاتی ہے اور جسم میں تھائی رائیڈ غدود کا توازن معمول سے ہٹ جاتا ہے.

اسے ہائپوٹائرائیڈزم کہا جاتا ہے۔ اس کی دیگر علامات میں سردی لگنا، وزن میں اضافہ اور تھکاوٹ شامل ہیں۔ تاہم یہ ذیابیطس کی بھی علامت ہوسکتی ہے جس زیادہ پیاس لگنا، پیشاب کا معمول سے زیادہ آنا اور بینائی کاکمزورہونا شامل ہے۔ بال خاص طور پر اوپری ہونٹ اور ٹھوڑی پر نمودار ہونے لگتے ہیں جو پولی سسٹک اووری سینڈروم کی علامت ہوسکتے ہیں جس میں ہارمون توازن میں نہیں رہتے۔ نرم اور زرد دھبے جسم میں کو لیسٹرول کی بلند سطح کی جانب اشارہ کرتے ہیں جس کی وجہ سے امرض قلب کا خطرہ بڑھنے لگتا ہے۔تھکی یا سوجی ہوئی آنکھیں دائمی الرجی کی جانب اشارہ کرتی ہیں اس میں خون کی نالیاں پھیل جاتی ہیں اور آنکھوں کی نیچے کی حساس جلد میں یہ سوجن اورگہرے جامنی رنگ کی صورت میں ظاہر ہونے لگتی ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔