Categories
News

خان صاحب : عوام کی ہمت جواب دے رہی ہے ، اب بھی وقت ہے یہ کام کر لو تو کچھ نہ کچھ بھرم رہ جائے گا ۔۔۔۔ حسن نثار کا وزیراعظم عمران خان کے لیے مشورہ

نامور کالم نگار حسن نثار اپنے ایک کالم میں لکھتے ہیں ۔۔۔۔۔۔۔۔اس ملک کا ہر شہری کیسی کیسی جُوٹھ اور کیسا کیسا جُھوٹ بھگت چکا ہے اور بھگت رہا ہے۔ الامان الحفیظ…. رب ہی جانتا ہے کب تک یہ سارے عذاب اور کذاب عوام کو بھگتنا ہوں گے جن کی زندگیوںے دو ہی عنوان ہیں۔ اول ’’فکر معاش‘‘ دوم ’’روٹی کی تلاش‘‘ تقریباً سب ہی کچھ فیک اور فراڈ ہے۔ گزشتہ رات بارش ہوئی، سارا برقی نظام چند بوندوں کی مار ثابت ہوا۔ یو پی ایس کے سہارے مدھم روشنی میں کالم لکھنے بیٹھا۔ جنریٹر بھی میری طرح بوڑھا ہوگیا ہے۔ اتنا شور مچاتا ہے کہ … ’’سلسلۂ کالم بھی ٹوٹ ٹو ٹ جاتا ہے‘‘ اس لئے بند کروا دیا۔کل ایک ’’خوشخبری‘‘ سنی۔ طبیعت ’’صحرا صحرا‘‘ ہوگئی حالانکہ محاورہ ’’باغ باغ‘‘ ہونا ہے لیکن اصل محاورہ یہ ہے ’’اجڑے باغاں دے گالہڑ پٹواری‘‘ لیکن یہ تو وہ باغ ہے جو کبھی ہرا بھرا ہوا ہی نہیں۔ یہاں پھول نہیں ببول ہی کھلتے رہے، تتلیاں نہیں مردار خور گدھ ہی منڈلاتے رہے، جگنو نہیں صرف جگے ہی چمکے، مالیوں کے نام پر نالیوں کے کیڑے، لیکن چھوڑیں اور خوشخبری کی طرف چلیں کہ میرا ایک فیورٹ ادارہ پنجاب فوڈ اتھارٹی بھی الماس بوبی کے نقش قدم پر چل نکلا ہے۔ یہ کام شہباز شریف نے کیا تھا جس کی پرفارمنس دیکھ کر میں نہال ہوگیا اور دل کھول کر داد دی، شاباش دی کیونکہ امید پیدا ہوئی کہ شہریوں کو خوراک میں ملاوٹ اور غلاظت سے بچنے کے امکانات روشن دکھائی دے رہے تھے۔ نور الامین مینگل سے لے کر کیپٹن عثمان جیسے افسران تک پنجاب فوڈ اتھارٹی نے بہترین انداز میں پرفارم کیا لیکن اب اس پر سرکاری نحوست چھا چکی ہے، لگتا ہے کوئی سانپ سونگھ چکا۔ پہلے فراٹے بھر رہی تھی اب اس کی اتھارٹی خراٹے لے رہی ہے۔ کسی سیانے سے اس کی وجہ پوچھی تو جواب سن کر حیرت میں ڈوب گیا

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *