Categories
صحت

اسپغول کا چھلکا مفید بھی جان لیوا بھی

اسپغول کا چھلکا صحت کیلئے انتہائی مفیدہے، اس میں جہاں بیماریوں پر قابو پانے کے فوائد ہیں، وہیں بعض احتیاطیں اختیار نہ کرنے پر نقصان دہ بلکہ جان لیوا بھی ثابت ہوسکتا ہے۔ آئیے اسپغول کے چھلکے کے فوائد ، نقصانات اور احتیاطی تدابیر آپ کو بتاتے ہیں:

معدے کیلئے مفید
اسپغول کا چھلکا معدے کے امراض کیلئے انتہائی مفید ہے۔ معدے کی گرمی، سینے کی جلن، تیزابیت پر کنٹرول پانے میں مددگار ثابت ہوتا ہے۔ قبض ہونے کی صورت میں نیم گرم دودھ میں ملا کر پینے سے فائدہ ہوتا ہے۔ پیٹ خراب ہونے یا دست کی صورت میں دہی میں اسپغول ملا کر کھانے سے افاقہ ملتا ہے۔ اسپغول کا چھلکا بڑی آنت کی صفائی میں مؤثر کردار اد اکرتا ہے۔
دل کے امراض کیلئے مفید
جسم میں موجود بُرے کولیسٹرول کے خاتمے میں اسپغول کا چھلکا اہم کردار ادا کرتا ہے۔ اس کے استعمال سے کولیسٹرول میں واضح طور پر کمی آتی ہے۔ یہ شریانوں میں جمی ہوئی چکنائی دور کرکے بُرے کولیسٹرول کم کرتا ہے۔ ہائی بلڈپریشر کیلئے اسپغول کا چھلکا مفید ثابت ہوتا ہے، یہ بلڈپریشر میں کمی لاتا ہے۔

نقصانات اور احتیاطیں
اسپغول کا چھلکا پانی کے بغیر خشک پھانکنے سے انتہائی نقصان دہ ثابت ہوسکتا ہے۔ اگر خشک اسپغول کے چھلکوں کے ذرات سانس کی نالی میں چلے جائیں تو یہ جان لیوا ثابت ہوسکتا ہے۔ جب کہ کم پانی کے ساتھ اسپغول کا چھلکا کھانے سے دم گھنٹے کا اندیشہ بھی بڑھ جاتا ہے۔
اسپغول کا چھلکا پیس کر کھانے سے بھی صحت کیلئے نقصان دہ ہوسکتا ہے۔
اسپغول کا چھلکا روزانہ استعمال کرنے میں احتیاط کرنی چاہیے۔ اس کے بلاناغہ استعمال سے بڑھاپے کے اثرات جلدی رونما ہوسکتے ہیں، جب کہ کمردرد اور جوڑوں کے درد کا شکار بھی ہوسکتے ہیں۔
اسپغول کا چھلکا، کسی بھی دوا کے ساتھ ہرگز مت کھائیں۔ اگر چھلکا کھانا چاہتے ہیں تو دوا سے پہلے یا بعد میں 2 گھنٹے کا وقفہ لازمی رکھیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔