Categories
Totkay

ادرک اور دہی کا پانی اپنے چہرے پر لگاتی ہوں ڈاکٹر بلقیس اپنی خوبصورتی کو بڑھانے کے لیے کون سی خاص چیزیں استعمال کرتی ہیں؟

خواتین چاہے گھر میں رہنے والی ہوں یا نوکری کرنے والی سب کو ہی خوبصورت جلد اور گورا رنگ پسند ہوتا ہے۔ لیکن جسمانی کمزوریوں اور روزمرہ کی پریشانیوں کی وجہ سے خواتین کا رنگ کم ہو جاتا ہے۔ وہ خواتین جو نوکریاں کرتی ہیں ان کا رنگ دھوپ میں باہر نکلنے کی وجہ سے بھی کم ہو جاتا ہے اور اس وجہ سے بھی کہ وہ پورا دن میک اپ کرکے رکھتی ہیں اور جلد کی اندرونی تہیں غیر معیاری پراڈکٹس استعمال کرنے کی وجہ سے بیکار ہو جاتی ہے۔ ب

الکل یہی حال ڈاکٹر بلقیس کا ہے جو صبح 6 بجے سے رات دیر تک کام میں مصروف ہوتی ہیں اور ٹی وی چینلز پر پروگرامز کرنے کی وجہ سے وہ بھی میک اپ کا استعمال کرتی ہیں جس سے ان کے چہرے پر بھی منفی اثرات پڑ رہے ہیں۔ اپنی ایک ویڈیو میں ڈاکٹر بلقیس جلد کو خوبصورت بنانے کا طریقہ بتاتے ہوئے کہتی ہیں:
ڈاکٹر بلقیس ٹپ:
میں روزانہ رات کو سونے سے پہلے اپنے چہرے کا سارا میک اپ صاف کرکے دھو کر اچھی طرح کلینزنگ ملک لگاتی ہوں اور دہی کا فیشل کرتی ہوں جس سے میری جلد صاف ستھری اور چمکدار نظر آتی ہے۔ کلینزنگ کرنے کے لیے میں دہی کا پانی زیادہ تر استعمال کرتی ہوں جس کا کوئی سائیڈافیکٹ نہیں ہوتا اور نہ کوئی نشانات پڑتے ہیں۔

استعمال کیسے کرنا ہے؟
٭ ایک چمچ دہی کو چہرے پر لگائیں اور 20 منٹ تک اس سے مساج کرتی رہیں جب تک کہ دہی کا پانی آپ کی جلد میں جذب نہ ہو جائے۔ پھر ایک انچ کا ادرک کا ٹکڑا کاٹیں اور اس پر سل بٹہ ماریں تاکہ اس کا رس نکلنے لگے۔ پھر اس پر دہی لگائیں اور دوبارہ پورے چہرے کا مساج کرتی رہیں۔ ادرک کے رس کو براہِ راست دہی میں مکس کرکے بھی لگا سکتی ہیں لیکن بہتر ہے کہ ادرک کو بھی چہرے پر مسل لیا جائے۔ اس کے علاوہ آپ دہی میں ایک چٹکی ہلدی بھی ڈال کر چہرے کا مساج کریں اس سے اضافی بلیک ہیڈز بھی نکلیں گی اور رنگ بھی نکھر جائے گا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔