Categories
Updates

والدہ کی خواہش تھی کہ 19 سال کی عمر میں شادی کرلوں، مریم نفیس

گزشتہ ماہ مارچ میں رشتہ ازدواج میں بندھنے والی اداکارہ مریم نفیس نے انکشاف کیا ہے کہ ان کی والدہ کی خواہش تھی کہ وہ کم عمری میں شادی کریں۔ مریم نفیس شوہر امان احمد اور والدہ کے ہمراہ ندا یاسر کے رمضان شو میں شریک ہوئیں، جہاں ایک سیگمنٹ میں سوالوں کے جوابات دیتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ جیسے ہی وہ 19 برس کی ہوئیں تو ان کی والدہ شادی کے لیے ان کے پیچھے پڑ گئیں اور ان پر بہت دباؤ ڈالا۔

اداکارہ نے بتایا کہ والدہ نے ان پر شادی کے لیے دباؤ ڈالا اور انہیں کہا کہ وہ شادی کے بعد جو کرنا چاہے، کرلیں لیکن اب شادی کرلیں۔ مریم نفیس کے مطابق والدہ نے بہت سارے لڑکوں کو گھر بلایا اور بہت سارے لڑکوں کی تصاویر بھی دکھائیں اور بھرپور کوشش کی کہ وہ کم عمری میں ان کی شادی کروالیں۔ اسی سیگمنٹ میں ایک اور سوال کے جواب میں مریم نفیس نے بتایا کہ جب انہیں امان احمد پسند آگئے اور انہوں نے والدہ کو بتایا تو وہ فوری طور پر ان کے شریک حیات کو پرکھے اور دیکھے بغیر ان کی شادی کے لیے تیار ہوگئیں۔ مریم نفیس کے مطابق امان احمد کا بتانے کے فوری بعد ہی والدہ نے انہیں کہا کہ چلو اب جلدی شادی کرلو لیکن انہوں نے اس وقت بھی والدہ کی بات نہیں مانی اور پہلے اپنے ہونے والے شریک حیات کو پرکھا اور سمجھا۔

اسی دوران مریم نفیس کے شوہر امان احمد نے بھی اپنے دل کی باتیں بتائیں اور انکشاف کیا کہ شادی کے لیے پسند کیے جانے سے قبل انہیں مختلف مراحل سے گزرنا پڑا۔ امان احمد کے مطابق مریم نفیس نے شادی کے لیے شرط رکھی تھی کہ اگر وہ ان کی ’پالتو کُتیا‘ (کُو کِی) کو پسند آئے تو وہ ان سے شادی کے لیے اہل ہوجائیں گے۔ امان احمد نے بتایا کہ خوش قسمتی سے وہ مریم نفیس کے ’پالتو کُتیا‘ (کُو کِی) کو پسند آگئے اور وہ پھر انہوں نے دیگر مراحل بھی طے کیے اور ان کی شادی ہوگئی۔ اسی حوالے سے مریم نفیس نے بتایا کہ شادی کے موقع پر بھی ان کی ’پالتو کُتیا‘ (کُو کِی) ان کے ساتھ تھیں اور عروسی لباس کے وقت وہ ان کی گود میں تھیں۔ انہوں نے بتایا کہ دراصل ’پالتو کُتیا‘ (کُو کِی) ان کی نہیں، ان کی والدہ کی ہیں مگر وہ اس کا باقی اہل خانہ سے مقابلے زیادہ خیال رکھتی رہی ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔