Categories
Uncategorized

بابر اعظم نے ایک ہی باری میں کوہلی، بریڈمین، لارا، پونٹنگ کو پیچھے چھوڑ دیا

پاکستان ٹیم کے کپتان بابر اعظم نے ٹیسٹ کرکٹ کی چوتھی اننگز میں سب سے بڑی باری کھیل کر ڈان بریڈمین، رکی پونٹنگ، ویرات کوہلی اور برائن لارا کو پیچھے چھوڑ دیا۔ کراچی ٹیسٹ کی چوتھی اننگز میں پاکستان ٹیم کو مشکلات سے نکالنے والے بابر اعظم نے 196 رنز کی تاریخی اننگز کھیلی۔ اس اننگز کے ساتھ بابر اعظم نے ریکارڈ بک میں نام درج کرواتے ہوئے ٹیسٹ کی چوتھی اننگز میں سب سے لمبی اننگز کھیلنے والے کپتان بن گئے۔ بابر سے قبل ٹیسٹ کرکٹ کی چوتھی اننگز میں سب سے بڑی اننگز کھیلنے کا ریکارڈ

انگلینڈ کے مائیکل ایتھرٹن کے پاس تھا جنہوں نے جنوبی افریقا کے خلاف 185 رنز کی اننگز کھیلی تھی۔یہاں دلچسپ بات یہ ہے کہ ڈان بریڈمین (آسٹریلیا)، رکی پونٹنگ (آسٹریلیا)، ویرات کوہلی(بھارت)اور برائن لار(ویسٹ انڈیز)جیسے نامور بیٹرز کپتانوں کو پیچھے چھوڑا۔ ڈان بریڈمین نے چوتھی اننگز میں سب سے زیادہ 173 ناقابلِ شکست رنز بنائے تھے، ویرات کا اسکور 156، برائن لارا کا 153 ناٹ آٹ جبکہ رکی پونٹنگ کا 141 رنز تھا۔ واضح رہے کہ دوسرے کرکٹ ٹیسٹ میچ میں آسٹریلیا نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا آغاز کیا، دوسرے ٹیسٹ کی پہلی اننگز میں آسٹریلیا نے 556 رنز بنائے اور اس کے نو کھلاڑی آؤٹ ہوئے جس پر آسٹریلیا نے اننگز ڈیکلیئر کر دی، پاکستان کی پوری ٹیم پہلی اننگز میں 148 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی، جس کے بعد آسٹریلیا نے دوسری اننگز میں 97 رنز بنائے اور اس کے دو کھلاڑی آؤٹ ہوئے اور انہوں نے اننگز ڈیکلیئر کرکے پاکستان کو بیٹنگ کی دعوت دی۔

اس طرح پاکستان کو جیتنے کے لئے 506 رنز کا ہدف ملا، دوسری اننگز میں پاکستان کی ٹیم نے اچھا کھیلا، خصوصاً بابر اعظم نے کیپٹن اننگز کھیلی انہوں نے 196 رنز بنائے، دوسری اننگز کی خاص بات محمد رضوان کی شاندار دفاعی اننگز تھی، جس کی وجہ سے آسٹریلیا کا جیت کا خواب چکنا چور ہو گیا اور کراچی ٹیسٹ ڈرا ہوگیا۔ عبداللہ شفیق نے 96، بابراعظم نے 196 جبکہ محمد رضوان نے شاندار 104 رنز بنائے اور وہ ناٹ آؤٹ رہے، اس طرح کھیل کے اختتام تک پاکستان نے 443 رنز بنائے اور اس کے سات کھلاڑی آؤٹ ہوئے۔ اس طرح دوسرا ٹیسٹ میچ بھی ڈرا ہو گیا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔