Categories
Uncategorized

میتھیو ہیڈن دورہ پاکستان چھوڑ کر آئی پی ایل کھیلنے والے آسٹریلیوی کھلاڑیوں پر برس پڑے

دورہ پاکستان میں وائٹ بال سیریز میں آرام کا فیصلہ کرنے پر میتھیو ہیڈن نے کرکٹ آسٹریلیا کو تنقید کا نشانہ بنایا۔

میتھیو ہیڈن نے کہا کہ جب کھلاڑی اپنے ملک کے لیے کھیلنے کو ترجیح نہیں دیں گے تو اس سے ٹیم کا کلچر خراب ہوگا، کسی بھی کھلاڑی کے لیے سب سے بڑی بات اپنے ملک کی نمائندگی کرنا ہوتی ہے۔

اُنہوں نے کہا کہ اپنے ملک کے لیے نمائندگی کرنے کو ترجیح نہ رکھنا غلط کلچر ہے، اپنے ملک کو ترجیح نہ دینے کا مطلب ہے کہ کھلاڑی کو اپنے ملک اور ساتھی کھلاڑیوں کی کوئی پرواہ نہیں۔

میتھیو ہیڈن نے یہ بھی کہا کہ ملک کے لیے کھیلنے کو ترجیح نہ دینے پرکھلاڑیوں کی تنخواہ میں کٹوتی ہونی چاہیے۔

اُن کا کہنا تھا کہ موجودہ دور میں انڈین پریمیئر لیگ کا معلوم ہے لیکن کوئی کھلاڑی اپنے حساب سے نہیں چل سکتا، کھلاڑی اگر آسٹریلیا کے لیے میسر نہ ہو اس سے سوال ہونا چاہیے۔

سابق آسٹریلوی ٹیسٹ کھلاڑی نے مزید کہا کہ کھلاڑی کو اس کام کی تنخواہ نہیں ملنی چاہیے جو اس نے کیا ہی نہ ہو۔

واضح رہے کہ ڈیوڈ وارنر، پیٹ کمنز، مچل سٹارک اور جوش ہیزل ووڈ دورہ پاکستان کے لیے وائٹ بال سیریز میں منتخب نہیں ہوئے تھے۔

گزشتہ سال آئی پی ایل کی وجہ سے 7 آسٹریلوی کھلاڑیوں نے دورہ بنگلادیش اور ویسٹ انڈیز سے دستبرداری اختیار کرلی تھی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔