Categories
Uncategorized

پاکستانی کھلاڑیوں کا عالمی کرکٹ میں بڑا دھماکہ ، انٹرنیشنل نیشنل کرکٹ کونسل نے اعلان کر دیا

آئی سی سی کی ٹی ٹوئنٹی ٹیم کے بعد پاکستانی کھلاڑی ون ڈے اور ٹیسٹ ٹیموں پر بھی حاوی رہے جب کہ بھارتی کہیں نظر نہیں آئے۔سال 2021 پاکستان کرکٹ ٹیم کے لیے بہترین سال رہا، چاہے وہ ٹی ٹوئنٹی ہو، ون ڈے ہو یا ٹیسٹ فارمیٹ آئی سی سی کی سال کی بہترین ٹیمیں پاکستانی کھلاڑیوں کے بغیر مکمل نظر نہیں آتیں۔

پاکستان کرکٹ ٹیم کے کپتان بابر اعظم ٹی ٹوئنٹی ٹیم کے کپتان قرار دیے جانے کے بعد آئی سی سی کی ون ڈے ٹیم آف دی ایئر کے بھی کپتان ہوں گے جب کہ تین پاکستانی کھلاڑی آئی سی سی ٹیسٹ ٹیم آف دی ایئر کے لیے بھی نامزد کیے گئے ہیں۔

11 سال بعد 2020 میں ٹیسٹ ٹیم میں جگہ بنانے والے فواد عالم نے 2021 میں 57 کی اوسط سے 571 رنز بنائے جس میں تین سنچریاں بھی شامل تھیں۔ دوسری جانب پاکستان کے دو فاسٹ بولرز شاہین آفریدی اور حسن علی نے بھی شاندار بولنگ کا مظاہرہ کیا۔2021 کے ٹیسٹ میچوں میں شاہین آفریدی نے 17 کی اوسط سے 47 جبکہ حسن علی نے 16 کی اوسط سے 41 وکٹیں حاصل کی ہیں۔

اس علامتی ون ڈے ٹیم کے گیارہ کھلاڑیوں کا انتخاب گزشتہ سال کی کارکردگی کی بنیاد پر کیا گیا ہے۔ اس ٹیم کی قیادت پاکستان کے بابر اعظم کو سونپی گئی ہے۔ بابر اعظم نے 2021 میں چھ ون ڈے میچوں میں 67 کی اوسط سے 405 رنز بنائے جس میں دو سنچریاں بھی شامل تھیں۔

اس سے قبل بابر اعظم کو گزشتہ روز جاری ہونے والی سال کی بہترین ٹی ٹوئنٹی ٹیم کا کپتان قرار دیا گیا تھا۔ بابر اعظم نے گزشتہ سال 29 ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میچوں میں ایک سنچری اور نو نصف سنچریوں کی مدد سے مجموعی طور پر 939 رنز بنائے تھے۔پکستان کے محمد رضوان کو بطور وکٹ کیپر اوپنر آئی سی سی سکواڈ میں شامل کیا گیا ہے۔

سال 2021 محمد رضوان کے لیے یادگار ترین سال ثابت ہوا، جس میں انہوں نے 29 انٹرنیشنل ٹی ٹوئنٹی میچوں میں پاکستان کی نمائندگی کی اور ایک سنچری اور 12 نصف سنچریوں کی مدد سے 1326 رنز بنائے، جو گزشتہ سال کسی بھی بلے باز نے بنائے تھے۔ سب سے زیادہ رنز بنے تھے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔