Categories
Uncategorized

2ماہ کے طویل دورے کے اختتام پر حسن علی کا پاکستانی فینز کے نام زبردست ویڈیو پیغام

ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ میں بری پرفارمنس کی وجہ سے تنقید کا نشانہ بننے والے قومی آل راؤنڈر حسن علی نے دورہ بنگلادیش کے اختتام پر پاکستانی فینز کے نام دلوں کو جوڑنے والا ایک ویڈیو پیغام جاری کیا ہے۔

پاکستان نے ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کے فوری بعد بنگلا دیش کا دورہ کیا جہاں بابر اعظم کی قیادت میں قومی ٹیم نے بنگال ٹائیگرز کو پہلے ٹی ٹوئنٹی اور پھر ٹیسٹ سیریز میں وائٹ واش کیا۔

قومی ٹیم ڈھاکا سے وطن واپسی کے لیے روانہ ہو گئی ہے اور ایسے میں پاکستان کرکٹ بورڈ کی جانب سے سوشل میڈیا پر آل راؤنڈر حسن علی کا ایک ویڈیو پیغام جاری کیا ہے جس میں انہوں نے ٹی ٹوئنٹی ورلڈکپ سے لیکر دورہ بنگلا دیش کے اختتام تک کا تذکرہ کیا ہے۔
حسن علی کا اپنے پیغام میں کہنا ہے کہ دو ماہ کے اس سفر میں کئی اتار چڑھاؤ آئے لیکن وہ کہتے ہیں نا کہ ’آل ویل اف اینڈز ویل‘ ہمارا یہ سفر بھی ایسا ہی رہا، اس سفر کے آغاز میں ہم نے انڈیا کو ہرا کر تاریخ رقم کی لیکن ایونٹ کے فائنل میں کوالیفائی نہ کرنے کا بہت دکھ ہوا۔

ان کا کہنا تھا کہ بوجھل دلوں کے ساتھ ڈھاکا روانگی کے لیے دبئی ائیر پورٹ پر پہنچے جہاں موجود پاکستانیوں اور کرکٹ فینز کی حوصلہ افزائی نے ہماری ہمت بڑھائی اور ہم نے ڈھاکا پہنچ کر بنگلا دیش کے خلاف پہلے ٹی ٹوئنٹی سیریز میں کلین سوئپ کیا اور پھر ٹیسٹ سیریز بھی جیتی۔

قومی آل راؤنڈر کا کہنا تھا کہ غلطیوں سے سیکھتے ہوئے پریکٹس کے ذریعے ہم بیٹنگ بولنگ اور فیلڈنگ سمیت ہر شعبے میں بہتری لیکر آئے جس کا ثبوت یہ ہے کہ ہر میچ میں ایک نیا کھلاڑی مین آف دی میچ بن رہا ہے جو ہماری ٹیم کے کامیاب ہونے کی ایک بڑی نشانی ہے۔

حسن علی نے مزید کہا کہ اب جب اس سفر میں تھوڑا سا وقفہ آیا ہے تو میں یہ کہوں گا کہ اپنے ملک کی نمائندگی سے بڑھ کر کچھ بھی نہیں ہے، ہم سب بابر اعظم کی قیادت میں متحد اور بے خوف کرکٹ جاری رکھنے کے لیے پرعزم ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔