Categories
News

جاتی عمرہ اراضی کیس: عدالت نے شریف کے گھر پر نوٹس چسپاں کرنے کا حکم دیا۔

لاہور (دنیا نیوز) پاکستان مسلم لیگ (ن) کی نائب صدرمریم نواز کی جانب سے انہیں قبول کرنے سےانکار کے بعد عدالت نے شریف رہائش گاہ کی دیواروں پر نوٹس چسپاں کرنے کا حکم دیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق عدالت نے جاتی امرا کی 127 کنال اراضی کی منتقلی سے متعلق کیس میں شریف خاندان کو نوٹس بھیجنے کی ہدایت کی تھی۔ نوٹس وصول کرنے سے انکار کے بعد عدالت نے انہیں گھر کی دیواروں پر چسپاں کرنے اور تصاویر جمع کرنے کا حکم دیا۔ اس سے قبل مقامی عدالت نے حکام کو رائے ونڈ میں 180 ایکڑ اراضی کی منتقلی منسوخ کرنے سے روک دیا تھا اور متعلقہ ڈیٹا کے ساتھ پنجاب حکومت سمیت تمام فریقین کو طلب کیا تھا۔ قابل قدر بات یہ ہے کہ لاہور ہائی کورٹ نے رائے ونڈ میں 180 ایکڑ اراضی کی غیر قانونی منتقلی سے متعلق کیس میں مریم نواز کی عبوری ضمانت کی درخواست ختم کر دی۔ دو رکنی بنچ نے کیس کی سماعت کی جس کے دوران عدالت نے قومی احتساب بیورو(نیب) کو ہدایت کی تھی کہ وہ مسلم لیگ (ن) کی رہنما کو گرفتار کرنے سے 10 دن پہلے آگاہ کرے۔ مریم نواز نے موقف اپنایا کہ نیب حکومت کے دباؤ پر انہیں گرفتار کرنا چاہتی ہے۔ نیب ترجمان نے بتایا کہ کم از کم 1،440 کنال اراضی – 180 ایکڑ – مریم نواز کے نام پر منتقل کی گئی۔ یہ 2013 کے بعد ہوا جب 3،568 کنال اراضی – 446 ایکڑ – شریف خاندان کے نام پر منتقل کی گئی۔ شریف خاندان پر 2015 میں لاہور کے ماسٹر پلان کو اس وقت کے ڈی سی او نورالامین مینگل اور ایل ڈی اے کے ڈی جی احد خان چیمہ کی مدد سے تبدیل کرنے کا بھی الزام ہے۔ نیب نے مزید الزام لگایا کہ شریف خاندان نے حکام کی ملی بھگت سے جاتی عمرہ میں ہزاروں کنال زمین کو ہری اراضی قرار دیا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے