Categories
News

عمران خان کاملک میں10 نئے ڈیم بنانے کا فیصلہ

تربیلا (این این آئی)وزیر اعظم عمران خان نے اعلان کیا ہے کہ حکومت نے 10 نئے ڈیم بنانے کا فیصلہ کرلیا ہے، مہمند ڈیم 2025 اور بھاشا ڈیم2028 میں مکمل ہوجائے گا جب تک ڈیم نہیں بنیں گے ہم پانی کو ذخیرہ نہیں کرسکتے،حکومت سولر اور ہائیڈرو پاور

سے بجلی بنائے گی، 5ویں توسیعی منصوبے سے اس ڈیم کی زندگی لمبی ہوجائے گی۔تربیلا ڈیم کے پانچویں توسیعی منصوبے کا سنگ بنیاد رکھنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ حکومت سولر اور ہائیڈرو پاور سے بجلی بنائے گی۔انہوں نے کہا کہ حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ ہم ایسی بجلی بنائیں گے جس سے موسم پر اثر نہ پڑے۔انہوں نے کہا کہ ماحولیاتی تبدیلی کا مسئلہ پوری دنیا کو درپیش ہے، گلوبل وارمنگ کی وجہ سے اب ایسے مقامات پر بھی آگ لگ رہی ہے جو تاریخ میں کبھی نہیں دیکھے گئے۔وزیر اعظم نے کہا کہ اس کے علاوہ اس طرح کے سیلاب بھی دیکھے جارہے جو کبھی تاریخ میں نہیں دیکھے گئے، دنیا میں سب سے زیادہ درجہ حرارت جیکب آباد میں ریکارڈ کیا گیا۔انہوں نے کہاکہ ان وجوہات کو مدنظر رکھتے ہوئے ضروری ہے کہ ہم ایسی بجلی بنائیں کہ جس سے گلوبل وارمنگ پر اثرات نہ پڑیں۔انہوں نے کہا کہ کوشش ہے کہ 2030 تک اپنی زیادہ تر بجلی کو ایندھن جلاکر نہ بنائیں بلکہ پانی، ہوا اور دیگر ذرائع کو استعمال کریں۔انہوں نے بتایا کہ اس 5ویں توسیعی منصوبے سے اس ڈیم کیزندگی لمبی ہوجائے گی، اس کے ساتھ ساتھ داسو اور بھاشا ڈیم کا وقت پر بننا بہت ضروری ہے، ہم نے پہلے ان کا نہیں سوچا۔وزیر اعظم نے کہا کہ بھاشا ڈیم بنانے کا فیصلہ 1984 میں ہوا تھا، اس کے اب تک نہ بننے کی وجہ سے ملک کو بہت نقصان ہوا، ہم دنیا کی مہنگی ترین بجلی بنارہے ہیں اور معاہدے ایسے ہیں کہ اس کا استعمال کریں یا نہ کریں ہمیں اس کےپیسے دینے پڑتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ اگر ہم پانی سے بجلی بناتے تو بجلی اتنی مہنگی نہیں ہوتی، ہم نے طویل المدتی منصوبے نہیں کیے جس

کی وجہ سے عوام کو مشکلات کا سامنا ہے۔عمران خان نے بتایا کہ حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ آئندہ 10 سالوں میں پاکستان میں 10 ڈیم بنائے جائیں گے۔انہوں نے کہاکہ آبادی کے بڑھنے کی وجہ سے پانی کی بھی کمیآرہی ہے، ہم اس کا ذخیرہ کریں گے تو عوام کو پانی پہنچاسکیں گے۔انہوں نے کہا کہ 2025 میں مہند ڈیم تیار ہوجائے گی، 2028 میں بھاشا ڈیم تیار ہوجائے گی اور اس طرح آہستہ آہستہ ہم آنے والی نسلوں کا مستقبل کو تحفظ فراہم کرسکیں گے۔قبل ازیں وزیراعظم عمران خان تربیلا 5 توسیعی منصوبے کا سنگ بنیاد رکھنے کے لئے تربیلا پہنچے ۔وزیراعظمآفس کے میڈیا ونگ سے جاری بیان کے مطابق تربیلا 5 توسیعی منصوبہ 80 کروڑ 70 لاکھ ڈالر کی لاگت سے تعمیر کیا جارہا ہے جس میں ورلڈ بینک اور ایشین انفراسٹرکچر انویسٹمنٹ بینک منصوبے کی تعمیر کے لیے مالی معاونت فراہم کر رہے ہیں۔منصوبہ محض 3 سال کی قلیل مدت میں 2024 تک مکمل کر لیا جائے گا جس کا بنیادی مقصد مستقبلمیں تربیلا ڈیم کو مٹی بھرنے کے خطرات سے محفوظ بنانا ہے۔منصوبے کی بدولت تربیلا ڈیم سے زرعی مقاصد کے لیے پائیدار بنیاد پر پانی کی دستیابی جاری رہے گی۔تربیلا 5 توسیعی منصوبے سے 1530 میگاواٹ ماحول دوست اور سستی پن بجلی بھی حاصل ہو گی اور منصوبہ ہر سال نیشنل گرڈ کو ایک ارب 34 کروڑ یونٹ سستی بجلی مہیا کرے گا۔اس منصوبے کی بدولت تربیلا سے بجلی پیدا کرنے کی صلاحیت 4 ہزار 888 میگاواٹ سے بڑھ کر 6 ہزار 418 میگاواٹ ہو جائے گی۔بیان میں کہا گیا کہ تربیلا 5 توسیعی منصوبہ پاکستان کی پانی، خوراک اور توانائی کی اہم ضروریات کو پورا کرنے میں اہم کردار ادا کرے گا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے