Categories
News

پیپلزپارٹی نے الیکٹرانک ووٹنگ مشین کو دھاندلی کا نیا منصوبہ قرار دے دیا

اسلام آباد(آن لائن)پاکستان پیپلزپارٹی نے الیکٹرانک ووٹنگ مشین کو دھاندلی کا نیا منصوبہ قرار دے دیا ہے پاکستان پیپلزپارٹی کے سیکرٹری جنرل سید نیر حسین بخاری نے ردعمل میں کہا ہے کہ ووٹ چور حکمران نے اب جدید طریقے سے ووٹ چوری کا

نیا منصوبہ بنایا لیا ہے انتخابات کروانا آئین کے تحت الیکشن کمیشن کی ذمہ داری ہے ووٹنگ مشین تحریک انصاف کا آئندہ انتخابات میں ووٹ چرانے کا نیا منصوبہ ہے نیر بخاری نے الیکشن کمیشن سے معاملے کا نوٹس لینے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ الیکشن کمیشن کو نظرانداز کرکے ووٹنگ مشین متعارف کروانا کمیشن کے اختیارات میں مداخلت کے مترادف ہے ووٹنگ مشین پر تحریک انصاف نے پارلیمان سمیت اسٹیک ہولڈرز کو اعتماد میں نہیں لیا نیر بخآری نے مزید کہا کہ حکومت دیگر ممالک کی مثال دیکھ لے جہاں ووٹنگ مشین کا استعمال نہیں ہوا اپوزیشن کے ووٹنگ مشین پر شدید تحفظات ہیں،حکومت انتخابی اصلاحات کے اہم معاملے کو متنازعہ بنا رہی ہینیر بخآری نے مزید کہا کہ ووٹنگ مشین کے اہم معاملے پر الیکشن کمیشن کا کردار نظر آ رہا ہے اور نہ ہی اپوزیشن سے بات چیت کی گئ، نیر بخاری نے کہا ہے کہ اپوزیشن کو نظرانداز کرنے سے الیکٹرانک ووٹنگ مشین مشکوک بن گئی ہیں انہوں نے کہا کہ ملک کے کئی علاقے بجلی کی سہولت سے محروم ہیں اور پسماندہ علاقہ جات میں شرح خواندگی کم ہے نیر بخآری نے مزید کہا ہے کہ الیکٹرانک ووٹنگ مشین کے زریعے حکومت ووٹ چرانے کے منصوبے پر عمل کرنا چاہتی ہیں چیرمین بلاول بھٹو زرداری کا ووٹ پر ڈاکہ نا منظور عوامی نعرہ بن چکا ہے پیپلز پارٹی ووٹ کے حق کے استعمال گنتی اور نتائج بارے کسی بھی مشکوک منصوبے کی مخالفت کرتی ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے